شہبازشریف کی عبوری ضمانت ، نیب میں طلبی

لاہور ہائی کورٹ نے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی 17 جون تک عبوری ضمانت منظور کرلی۔ نیب نے منی لانڈرنگ اور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں 9 جون کو طلب کرلیا ہے۔

اپوزیشن لیڈر  کی طرف سے اعظم نذیر تارڑ اور امجد پرویز ایڈووکیٹ پیش ہوئے۔ شہبازشریف نے عبوری ضمانت کیلئے لاہور ہائی کورٹ سے رجوع کیا تھا اور درخواست میں چیئرمین نیب سمیت دیگر کو فریق بنایا تھا، عدالت نے مختصر سماعت کے بعد شہبازشریف کی عبوری ضمانت منظور کرلی ، لاہورہائی کورٹ نے نیب کو حکم دیا کہ شہبازشریف کو 17 جون تک گرفتار نہ کیا جائے۔ عدالت نے شہباز شریف کو 5 لاکھ روپے کے مچلکے جمع کرانے کی ہدایت کی اور آئندہ سماعت پر نیب سے جواب طلب کرلیا۔

نیب نے گزشتہ روز اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا تھا لیکن نون لیگ کے صدر گھر پر موجود نہیں تھے۔

نیب لاہور کی ٹیم آمدن سے زائد اثاثہ جات اور مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں نون لیگ کے صدر کو گرفتار کرنا چاہتی تھی ، اہلکار تقریبا ڈیڑھ گھنٹہ انتظار کرتے رہے اور پھر واپس چلے گئے۔

نیب نے شہباز شریف کو منی لانڈرنگ اور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں تفتیش کیلئے 9 جون کو طلب کیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو