کشمیریوں کی منزل آزادی، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مودی حکومت بند گلی میں پھنس گئی، کشمیریوں کی منزل آزادی ہے۔ حریت رہنما علی گیلانی کو نشان پاکستان دیا جائے گا۔

یوم استحصال کشمیر کے موقع پر مظفر آباد میں آزاد جموں کشمیر قانون ساز اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ نریندر مودی نے گزشتہ سال 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرکے بہت بڑی اسٹریٹیجک غلطی کی۔ مودی کا تکبر اس کی تباہی کا سبب بنے گا۔ آزاد کشمیر کو بھارت میں شامل کرنے کا نقشہ بھارتی تکبر تھا۔ کشمیر کے نقشے کے پیچھے ایک فلسفہ ہے، بھارت کو نقشے کا ردعمل دینا ضروری تھا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان نے عالمی برادری کے سامنے مسئلہ کشمیر بھرپور طریقے سے اٹھایا۔ بھارت کشمیر کی آبادی کا تناسب بدلنا چاہتا تھا جبکہ چین سے خوفزدہ مغربی ممالک بھارت کو استعمال کرنا چاہتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ پاکستانی اقدامات کے نتیجے میں بھارت کو پسپائی ہوئی اور عالمی سطح پر پاکستان کے بیانیے کو پذیرائی ملی ، آج دنیا کشمیر کی طرف دیکھ رہی ہے ، ظلم کے باوجود کشمیریوں نے سری نگر میں پاکستان کا پرچم بلند کیا۔ کشمیری نوجوان موت سے بے خوف ہیں، بھارت کا کشمیریوں سے متعلق پلان ناکام ہوگا۔

وزیراعظم نے حریت رہنما علی گیلانی کو طویل جدوجہد پر 14 اگست کو نشان پاکستان دینے کا اعلان کیا ، انھوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہئے۔

ٹرینڈنگ

مینو