زیادتی کے بعد موٹروے پر پولیس کا گشت

پنجاب پولیس نے خاتون سے اجتماعی زیادتی اور تنقید کے بعد آخر کار لاہور سیالکوٹ موٹروے کا سیکیورٹی کنٹرول سنبھال لیا۔

آئی جی پنجاب انعام غنی نے اعلی سطح اجلاس میں اسپیشل پروٹیکشن یونٹ اور پنجاب ہائی وے پٹرول کی ٹیموں کو گشت کا حکم دیا، اب لاہور سیالکوٹ موٹروے پر ایس پی یو اور پی ایچ پی کے ڈھائی سو اہلکار گاڑیوں اور موٹرسائیکلوں پر پٹرولنگ کر رہے ہیں۔

خاتون سے زیادتی کے بعد موٹروے پولیس نے موقف اختیار کیا تھا کہ ایسٹرن بائی پاس کا کنٹرول ان کے پاس نہیں۔ ایسٹرن بائی پاس کو ایک سال پہلے آپریشنل کیا گیا تھا جو کالاشاہ کاکو موٹروے انٹرچینج تک جاتا ہے۔

9 ستمبر کو لاہور سے گوجرانوالہ جاتے ہوئے گاڑی کا پیٹرول ختم ہونے پر خاتون کو گجرپورہ میں موٹروے پر زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ 2 ملزمان نے بچوں کے سامنے ماں سے گن پوائنٹ پر زیادتی کی اور زیورات اور نقدی لوٹ کر فرار ہوگئے۔

ٹرینڈنگ

مینو