بجٹ مسترد، اپوزیشن کا احتجاج، ویڈیو

قومی اسمبلی میں بجٹ اجلاس کے دوران اپوزیشن نے شدید احتجاج کیا، وفاقی وزیر حماد اظہر کی تقریر کے دوران جھوٹ جھوٹ کے نعرے بلند ہوتے رہے، نون لیگ ، پیپلزپارٹی اور مجلس عمل نے احتجاج میں حصہ لیا۔ ارکان نے پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر کورونا کمزور ہوگیا ، 50 لاکھ گھر کہاں ہیں اور زراعت کی بربادی نامنظور اور کسان کی بربادی نامنظور جیسے نعرے درج تھے۔

اجلاس جاری رہا اور اپوزیشن ارکان آٹا چور، چینی چور اور علی بابا چالیس چور کے نعرے لگاتے رہے۔

اپوزیشن نے اسمبلی میں تو بجٹ مسترد کیا ہی اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے بھی بیان جاری کیا اور بجٹ کو عوام دشمن قرار دے دیا، انھوں نے کہا کہ غریب کش بجٹ سے مہنگائی اور بیروزگاری میں مزید اضافہ ہوگا۔ حکومت نے اپنی نالائقی پہلے نون لیگ اور اب کورونا کے پیچھے چھپانے کی کوشش کی، بجٹ سے ملک کی رہی سہی معاشی سانسیں بھی رک جائیں گی۔

شہباز شریف نے بجٹ کو تباہی کا نسخہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ حکومت کی نااہلی کا خمیازہ عوام بھگت رہے ہیں، 68 سال میں پہلی بار جی ڈی پی منفی میں ہوگئی ہے، یہ ہے حکومت کی کارکردگی؟

ٹرینڈنگ

مینو