کراچی کیلئے منصوبوں کی منظوری

وزیراعظم عمران خان نے کراچی سے متعلق مختلف منصوبوں کی منظوری دے دی جبکہ وفاق نے الزام لگایا ہے کہ سندھ  حکومت کراچی کے مسائل کو سنجیدگی سے نہیں لے رہی۔

اسلام آباد میں کابینہ اجلاس کے دوران کراچی کی صورتحال پر غور کیا گیا، بعد میں پریس کانفرنس کے دوران وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا کہ سندھ حکومت کراچی کے مسائل کو سنجیدگی سے نہیں لے رہی یا سنجیدگی سے حل کر نہیں پا رہی۔

شبلی فراز نے بتایا کہ کراچی کے مسائل جوں کے توں ہیں۔ پانی ، سیوریج اور سالڈ ویسٹ مینجمینٹ کا مسئلہ ہے۔ وفاق سندھ حکومت کا مینڈیٹ تسلیم کرتا ہے۔ سندھ حکومت کے تعاون کے بغیر مسائل حل نہیں ہوسکتے۔

وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے ایک انٹرویو میں بتایا کہ وزیراعظم کی منظوری کے بعد کراچی سے متعلق منصوبوں کا مسودہ سندھ حکومت سے شیئر کرلیا گیا ہے ، چند روز میں متفقہ فیصلہ کرکے کام شروع کردیا جائے گا۔

اسد عمر نے کہا کہ پانی کی سپلائی، صفائی، سیوریج، ٹرانسپورٹ اور سڑکوں سے متعلق منصوبوں پر کام کیا جائے گا، سندھ حکومت کے ساتھ فنڈنگ اور کام کا بھی میکنزم بنایا جائے گا۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کی خواہش ہے کہ کراچی میں ایمرجنسی بنیاد پر کام کیا جائے ، حکومت چاہتی ہے جلد سندھ حکومت کے ساتھ معاملات طے ہوجائیں اور گراؤنڈ پر کام کا آغاز ہو۔

ٹرینڈنگ

مینو