وزیراعظم کا عشائیہ، کئی اپنے بھی غائب

محمد عثمان

وزیراعظم عمران خان کے عشایئے میں مسلم لیگ قاف نے شرکت نہیں کی جبکہ پی ٹی آئی کے بھی کئی ارکان شریک نہیں ہوئے۔ عمران خان کا کہنا ہے کہ اتحادیوں کے تحفظات دور کئے جائیں گے۔ حکومت کو کوئی خطرہ نہیں۔

عمران خان نے بجٹ کی منظوری اور تحفظات پر بات چیت کیلئے حکومتی اور اتحادی جماعتوں کے ارکان پارلیمنٹ کو عشایئے پر بلایا تھا، دعوت پر تحریک انصاف ، جی ڈی اے ، متحدہ قومی موومنٹ اور بلوچستان عوامی پارٹی کے ارکان وزیراعظم ہاوس پہنچے۔

وزیراعظم نے ارکان اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ رہنما بے فکر رہیں حکومت کہیں نہیں جارہی ، پی ٹی آئی حکومت کے علاوہ کوئی چوائس نہیں، اگر چینی مافیا کے خلاف ایکشن نہ لیتا تو حکومت کے خلاف محاذ نہ بنتا، چینی مافیا میں شامل آٹھ دس افراد سے پرویز مشرف بھی بلیک میل ہوئے اور اب پی ٹی آئی حکومت کو ناکام کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ نظریئے سے ہٹے تو ہماری حکومت اور پارٹی ختم ہوجائے گی۔

اس اہم موقع پر پی ٹی آئی کے کئی ارکان بھی غائب تھے ، ذرائع نے زبر نیوز کو بتایا کہ کئی ارکان اسمبلی نے حلقوں میں مسائل حل نہ ہونے پر بطور احتجاج عشایئے میں شرکت نہیں کی۔ اسپیکر اسد قیصر آخری لمحات میں شریک ہوئے ، وہ اپنے ساتھ 12 ارکان اسمبلی کو مناکر لائے اور وزیراعظم سے ملاقات بھی کرائی۔ حکومت کی اہم اتحادی مسلم لیگ قاف نے پہلے ہی عشایئے میں شرکت سے معذرت کرلی تھی جبکہ بی این پی مینگل نے حکومت سے الگ ہونے کے باعث شرکت سے انکار کردیا تھا۔

عشائیہ سے پہلے حکمراں اتحاد میں شامل جماعتوں کے ارکان نے وزیراعظم سے ملاقات کی اور مشاورت نہ کرنے کا شکوہ کیا۔ وزیراعظم نے شکایات دور کرنے کا وعدہ کیا اور بجٹ کی منظوری کیلئے تمام ارکان کو پارلیمنٹ میں حاضری یقینی بنانے کی ہدایت کی۔

ٹرینڈنگ

مینو