حکمراں اتحاد اور اختلافات کی کھچڑی

محمد عثمان ، اعجاز امتیاز

حکمراں اتحاد میں اختلافات کی کھچڑی پکنے لگی، مسلم لیگ قاف نے وزیراعظم عمران خان کے عشایئے میں شرکت نہیں کی۔

وزیراعظم عمران خان نے بجٹ کی منظوری اور تحفظات پر بات چیت کیلئے اتحادی رہنماؤں کو عشایئے پر بلایا تھا، قاف لیگ نے حکومت کو بجٹ کی منظوری میں تو ساتھ دینے کی یقین دہانی کرادی لیکن اہم دعوت میں شرکت سے معذرت کرلی، ترجمان قاف لیگ کا کہنا تھا کہ پارٹی رہنما مصروفیات کے باعث عشایئے میں شرکت نہیں کرسکتے، ذرائع کے مطابق چوہدری برادران نے پہلے ہی ہم خیال جماعتوں کے رہنماؤں کے اعزاز میں عشایئے کا اہتمام کر رکھا تھا۔

اسپیکر اسد قیصر نے قاف لیگ کے رہنما چوہدری شجاعت حسین سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا اور کسی ایک رکن قومی اسمبلی کو عشایئے میں بھیجنے کی درخواست کی لیکن چوہدری شجاعت نے معذرت کرلی۔ بی این پی مینگل حکومتی اتحاد سے الگ ہونے کے باعث عشایئے میں شرکت سے انکار کرچکی ہے۔

وزیراعظم نے عشایئے کا اہتمام پی ایم ہاوس میں کیا اور ذرائع کے مطابق عمران خان نے اتحادی رہنماؤں کو مختلف ایشوز پر حکومتی پالیسی سے آگاہ کیا اور تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی۔

ٹرینڈنگ

مینو