رحمان ملک پر زیادتی کا الزام

پاکستان میں مقیم امریکی شہری اور بلاگر سنتھیارچی نے پاکستان پیپلزپارٹی کی اعلی قیادت پر بڑے الزامات لگادیئے، انھوں نے ویڈیو پیغام میں الزام لگایا کہ رحمان ملک نے 2011 میں ان سے زیادتی کی ، رحمان ملک اس وقت وزیرداخلہ تھے، انھوں نے یوسف رضا گیلانی پر بدسلوکی اور مخدوم شہاب پر  دست درازی کا بھی الزام لگایا ہے۔

سنتھیارچی نے بتایا کہ ان کے پاس ثبوت موجود ہیں جو وقت آنے پر پیش کئے جائیں گے، انھوں نے گزشتہ ہفتے ایف آئی اے میں رپورٹ کرادی ہے۔ سنتھیارچی نے دعویٰ کیا کہ انھیں دھمکیاں دی جارہی ہیں۔

اس سے پہلے پیپلزپارٹی نے سنتھیارچی کے خلاف مئی میں ایف آئی اے کو درخواست دی تھی ، اس میں کہا گیا تھا کہ خاتون نے بینظیر بھٹو اور آصف زرداری کی نجی زندگی کے بارے میں ٹوئٹر پر غلط زبان استعمال کی اور الزامات لگائے۔

پیپلزپارٹی کی جانب سے یہ درخواست ایڈووکیٹ شکیل عباسی نے دائر کی تھی اور فوری ایکشن پر زور دیا تھا۔

سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کا ردعمل بھی آگیا، انھوں نے کہا کہ خاتون نے شہید بینظیر بھٹو پر الزامات لگائے ، کوئی بھی یہ برداشت نہیں کرسکتا، پیپلزپارٹی کے رہنما نے پوچھا کہ کیا وزیراعظم ایوان صدر میں ایسی حرکت کرسکتا ہے ؟ خاتون ایوان صدر میں کیا کر رہی تھیں ؟ انھیں سیاستدانوں پر الزام تراشی کا حق کس نے دیا ؟ یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ امریکی خاتون کو یہ بات کرتے ہوئے شرم آنی چاہئے۔

ٹرینڈنگ

مینو