کراچی حادثہ: صحافی انصار نقوی جاں بحق

کراچی میں پی آئی اے کا طیارہ تباہ ہونے سے سینئر صحافی انصار علی نقوی بھی جاں بحق ہوئے۔  وہ ہر عید پر کراچی آیا کرتے تھے جہاں ان کی فیملی مقیم ہے۔

طیارہ حادثے نے 97 گھر اجاڑ دیئے، جاں بحق افراد میں نامور صحافی انصار نقوی بھی شامل ہیں۔ گورنر سندھ عمران اسماعیل کے بعد مرحوم کے بیٹے شاہ زیب انصار نے بھی والد کے انتقال کی تصدیق کردی ہے۔

انصار نقوی گھر والوں کے ساتھ عید منانے کیلئے لاہور سے کراچی آرہے تھے، وہ ان دنوں 24 نیوز میں سینئر ڈائریکٹر کرنٹ افیئرز اینڈ پروگرامنگ تھے۔

30 سال تک صحافت سے وابستہ رہنے والے انصار نقوی طویل عرصے انگریزی اخبار میں کام کرتے رہے، وہ جیونیوز کے بانی رکن اور ادارے کے کنٹرولر نیوز بھی رہ چکے تھے۔

سینئر صحافی حامد میر نے منفرد انداز میں اپنے منفرد دوست سے محبت کا اظہار ہے۔

24 نیوز کے ملازمین نے انصار نقوی کی دفتر سے روانگی کے لمحات سوشل میڈیا پر شیئر کئے ہیں۔ صحافیوں نے انھیں انتہائی نفیس ، ملنسار اور محبت کرنے والا انسان قرار دیا ہے۔

نون لیگ کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے بھی ان کے انتقال پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا ہے کہ مرحوم محبتیں بانٹنے والے شخص تھے۔

ٹرینڈنگ

مینو