سندھ: فیل بھی پاس، 12 ویں تک طلبا پروموٹ

سندھ حکومت نے پہلی سے بارہویں تک کے تمام طلبا کو اگلی جماعتوں میں پروموٹ کرنے کا اعلان کردیا۔

سندھ میں نویں جماعت کے طلبا کو دسویں اور گیارہویں جماعت والوں کو بارہویں جماعت میں پروموٹ کرنے کا اعلان کردیا گیا۔ جو طلبا مختلف مضامین میں فیل ہیں انھیں بھی پاسنگ مارکس دے کر اگلی جماعتوں میں ترقی دے دی جائے گی۔

کراچی میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرتعلیم سندھ سعید غنی نے بتایا کہ جو طلبا مضامین میں بہتری چاہتے ہیں انھیں اگلے سال امتحان کا موقع دیا جائے گا، حکومت نے نجی تعلیمی اداروں کو کھولنے سے نہیں روکا ، وہ چاہیں تو اسکول کھول لیں، حکومت نے تدریسی عمل بند کیا ہے ، کوئی اسکول اپنی مرضی اور حکومتی اجازت کے بغیر تدریسی عمل شروع نہیں کرسکتا، یکم جون سے تعلیمی ادارے نہیں کھلیں گے۔

سعید غنی نے کہا کہ ہمارے پاس نویں اور گیارہویں کے طلبا کا ریکارڈ نہیں اس لئے انھیں اگلی کلاسز میں بغیر کسی مارکس کے ترقی دی جائے گی، جب یہ طلبا دسویں اور بارہویں کے امتحانات دیں گے اور اس میں جو نمبرز لیں گے ان نمبروں کو نویں اور گیارہوں کے نمبرز تصور کیا جائے گا۔

دسویں اور بارہویں کے طلبا کو نویں اور گیارہویں کے نتائج کو مدنظر رکھ کر اگلی کلاسز میں پروموٹ کیا جائے گا، طلبا کے حاصل کردہ نمبروں میں 3 فیصد اضافی نمبرز بھی شامل کئے جائیں گے۔ اس سال پرچے نہیں ہوں گے ، جو طلبا مارکس میں بہتری چاہتے ہیں انہیں بھی پرموٹ کردیا جائے گا البتہ اگر وہ چاہیں گے تو انہیں اگلے سال اس کا موقع دیا جائے گا۔ پرائیوٹ طلبا پر بھی یہی قواعد لاگو ہوں گے۔

ٹرینڈنگ

مینو