جلوس برآمد ہوں گے ؟ اجتماعی اعتکاف ہوگا ؟

سندھ حکومت نے اعلان کیا ہے کہ صوبے میں تمام مذہبی اجتماعات پر پابندی برقرار رہے گی۔

ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ کے نوٹی فکیشن میں کہا گیا ہے کہ 23 اپریل کو علما کے ساتھ طے کئے معاہدے پر عملدرآمد کیا جائے گا۔

نوٹی فکیشن کے مطابق رمضان المبارک میں تمام مذہبی  اجتماعات ، جلوس اور ریلیوں پر پابندی ہے۔

یہ نوٹی فکیشن ایسے وقت میں جاری کیا گیا ہے جب شہادت حضرت علی علیہ السلام کے سلسلے میں ایام عزا کا آغاز ہوچکا ہے جو 3 روز جاری رہیں گے، 21 رمضان کے جلوس کی انتظامیہ اعلان کرچکی ہے کہ کورونا سے بچاو کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے نشترپارک میں مجلس ہوگی اور جلوس بھی برآمد کیا جائے گا۔

اسی ماہ لوگوں کی اکثریت اعتکاف میں بیٹھتی ہے اور شب قدر کی عبادات بھی کی جاتی ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو