علی زیدی کے اقدام کا فائدہ ملزمان کو ہوا

وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ سندھ روشن پروگرام کرپشن کیس میں نیب کے راولپنڈی آفس میں پیش ہوگئے۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے کہا کہ وفاقی وزیر علی زیدی کی بات نہ کریں ، کوئی موٹر سائیکل پر رات کو آتا ہے اور انھیں صفحات دے جاتا ہے۔

تحقیقاتی ٹیم نے مراد علی شاہ سے جعلی اکاونٹس سے متعلق سوالات کئے، مراد علی شاہ نے سندھ روشن پروگرام کرپشن الزامات سے لاتعلقی ظاہر کردی۔

بعد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے کہا کہ عزیر بلوچ کی اصلی اور 7 دستخط والی جے آئی ٹی رپورٹ محکمہ داخلہ میں موجود ہیں۔

وزیراعلی سندھ کا کہنا تھا کہ علی زیدی نے غیر ذمے داری کا مظاہرہ کیا اور غیر دستخط شدہ کاپی دکھائی ، مجھے لگتا ہے اس رپورٹ کو لانے کا مقصد ملزمان کو فائدہ پہنچانا تھا۔ ہم پر سیاسی دباو تھا اس لئے اصلی جے آئی ٹی رپورٹ پبلک کی۔ مراد علی شاہ نے بتایا کہ علی زیدی کی جے آئی ٹی رپورٹ میں سی آئی ڈی لکھا ہے، اصل جے آئی ٹی رپورٹ میں سی آئی ڈی نہیں سی ٹی ڈی لکھا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو