طلال چوہدری پر تشدد، ہڈیاں توڑ دی گئیں، ویڈیو

وقار احمد

نون لیگ کے رہنما طلال چوہدری کو پارٹی کی رکن قومی اسمبلی عائشہ رجب بلوچ کی رہائش گاہ کے باہر تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور ان کی کئی ہڈیاں ٹوٹ گئیں۔

ذرائع کے مطابق طلال چوہدری نے عبداللہ گارڈن ٹاؤن فیصل آباد سے 24 ستمبر کی رات 3 بجے پولیس کو 15 پر کال کی، ابھی پولیس ٹیم روانہ ہوئی ہی تھی کہ رکن اسمبلی عائشہ بلوچ نے بھی 15 پر شکایت درج کرادی۔

عائشہ بلوچ نے بتایا کہ کچھ مشکوک افراد ان کی رہائش گاہ کے باہر  موجود ہیں اور وہ خطرہ محسوس کررہی ہیں۔

ذرائع کے مطابق طلال چوہدری پر 4 افراد نے تشدد کیا اور ان کا بازو فریکچر ہوگیا جبکہ کندھے پر بھی چوٹ آئی۔

طلال چوہدری کے مبینہ جھگڑے کی ویڈیو بھی منظر عام پر آگئی ہے، اس میں طلال چوہدری کہہ رہے ہیں کہ انھیں تنظیم سازی کا کہہ کر یہاں بلایا گیا تھا، ان کا فون چھینا گیا۔ ٹیلی فون ملے گا تو سب سامنے آجائے گا۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی شہباز گل نے طلال چوہوری پر رکن قومی اسمبلی کو ہراساں کرنے کا الزام لگایا ہے البتہ خاتون کے بھائی نے طلال چوہدری سے لڑائی کی تردید کی ہے، پولیس نے تصدیق کی ہے کہ ابتک کسی فریق نے مقدمہ درج نہیں کرایا ہے۔

طلال چوہدری کو لاہور کے نجی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ماضی میں طلال چوہدری اور عائشہ بلوچ کے درمیان بہت اچھے تعلقات رہے ہیں لیکن کچھ عرصے پہلے اختلافات پیدا ہوگئے تھے۔

ٹرینڈنگ

مینو