کورونا صدر ٹرمپ کے آس پاس منڈلانے لگا

کورونا وائرس امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے آس پاس منڈلانے لگا، ان کے مشیر ڈاکٹر انتھونی فاوچی سمیت وائٹ ہاوس کورونا ٹاسک فورس کے 3 اعلی عہدیداروں کو  قرنطینہ میں جانا پڑ گیا۔

قرنطینہ اختیار کرنے پر مجبور افسروں میں  ڈاکٹر فاوچی کے ساتھ ڈائریکٹر سی ڈی سی رابرٹ ریڈفیلڈ اور سربراہ ایف ڈی اے بھی شامل ہیں۔ تینوں افراد کورونا سے متاثرہ ایک اہلکار سے قریبی تعلق میں رہے تھے۔

رابرٹ ریڈفیلڈ کا کہنا ہے کہ وہ  2 ہفتے گھر سے کام کریں گے، کمشنر ایف ڈی اے اسٹیفن ہان کو بھی قرنطینہ اختیار کرنا پڑا ہے ، انھوں نے  نائب صدر مائیک پنس کی پریس سیکریٹری  کیٹی ملر سے ملاقات کی تھی جن کا بعد میں کورونا ٹیسٹ مثبت آیا تھا۔

کیٹی ملر امریکی صدر کے امیگریشن سے متعلق امور کے مشیر اور اسپیچ رائٹر اسٹیفن ملر کی اہلیہ ہیں جو خود بھی کورونا کے مریض بن چکے ہیں۔

ڈاکٹر فاوچی کا کہنا ہے کہ وائٹ ہاوس کے جس اہلکار کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے وہ اس سے انتہائی قریبی تعلق میں نہیں تھے مگر احتیاط کے طور پر معتدل نوعیت کا قرنطینہ اختیار کرلیا ہے۔

امریکا کے صدر ڈونلڈٹرمپ کی بیٹی ایوانکا ٹرمپ کے ذاتی معاون سمیت خفیہ ایجنسیوں کے 11 اہلکاروں کا کورونا ٹیسٹ بھی مثبت آچکا ہے۔ 23 صحت یاب ہوچکے ہیں جبکہ 60 سے زائد قرنطینہ میں ہیں۔

اس صورتحال میں صدر ٹرمپ اور ان کے نائب مائیک پنس کا روزانہ کی بنیاد پر کورونا ٹیسٹ کیا جا رہا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو