سندھ میں حالیہ بارشیں: 80 افراد جاں بحق

وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے تصدیق کی ہے کہ صوبے میں حالیہ بارشوں کے دوران 80 افراد جاں بحق ہوئے، ان میں 47 کا تعلق کراچی سے ہے۔

مراد علی شاہ نے کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ انھوں نے گزشتہ رات شہر کا دورہ کیا تو شاہراہ فیصل پر گاڑی ڈوب گئی اور کمر تک پانی سے گزر کر باہر نکلنا پڑا۔

وزیراعلی سندھ نے عوام کے نقصانات کا ازالہ کرنے کا وعدہ کیا اور وفاق سے بھی درخواست کی کہ وہ اس سلسلے میں مدد کرے، مراد علی شاہ نے کہا یہ نہیں ہونا چاہئے کہ وفاق مدد کرے اور اختیارات بھی مانگے۔ نالوں پر تجاوزات کا خاتمہ کرکے لوگوں کو متبادل جگہ دینے کا انتظام کیا جائے گا۔

انھوں نے بتایا کہ 28 اگست کو شاہ فیصل بیس پر 230 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی، اس بار اگست کے دوران سرجانی ٹاون میں 604 ملی میٹر بارش ہوئی ہے۔ بارش نے شہر کو ہلا کر رکھ دیا ، 1931 اور 1977 میں کراچی میں ریکارڈ بارشیں ہوئی تھیں، اس کے بعد اب اتنی شدید بارشیں ہوئی ہیں۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ 6 جولائی سے اب تک کراچی میں 47 افراد بارشوں کے باعث حادثات میں جاں بحق ہوئے، 28 اگست کو کراچی میں 17 اموات ہوئیں، پورے سندھ میں 80 افراد مون سون اسپیل کے دوران جاں بحق ہوچکے ہیں، ان میں حیدرآباد ڈویژن میں 10 اور میرپورخاص ڈویژن میں 11 اموات شامل ہیں۔

وزیراعلی نے کہا کہ ایڈمنسٹریٹر تعینات کرنے سے متعلق گورنر کا بیان دینا درست نہیں، یہ ان کا اختیار نہیں، سندھ کابینہ ایڈمنسٹریٹر کا تقرر میرٹ پر کرے گی ، میئر کے خطوط سے متعلق سوال پر مراد علی شاہ بولے کہ انھوں نے خط لکھے ہوں گے اور ہم نے ان کے جواب بھی دیئے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو