کراچی :طوفانی بارش، سڑکوں پر پانی ہی پانی

اعجاز امتیاز، محسن رضا

شہر قائد کے مختلف علاقوں میں طوفانی بارش سے جل تھل ایک ہوگیا۔  کراچی اور حیدرآباد میں 100 سے 120 ملی میٹر بارش کی پیش گوئی کی گئی ہے اور اربن فلڈنگ کا بھی خدشہ ہے۔

بارش نے نالوں کی صفائی کے دعوؤں کا پول کھول دیا، کلفٹن کے پوش علاقوں سمیت صدر ، ناظم آباد، گلشن اقبال، گلستان جوہر ، فیڈرل بی ایریا ، لیاقت آباد اور دیگر مقامات پر پانی کھڑا ہوگیا۔ کے الیکٹرک شہریوں کو تنگ کرنے سے باز نہ آئی، کراچی میں بارش کی پہلی بوند پڑتے ہی مختلف علاقوں میں بجلی غائب ہوگئی۔

شہر قائد میں دن بھر شدید گرمی اور حبس رہا جبکہ شام ہوتے ہی بادل برسنا شروع ہوگئے، طوفان بارش کے باعث سڑکوں پر ٹریفک جام ہوگیا اور پروازوں کا شیڈول بھی متاثر ہوا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق بارش کا سلسلہ وقفے وقفے سے 3 روز جاری رہنے کا امکان ہے۔

محکمہ موسمیات کے حکام کا کہنا ہے کہ سندھ اور بلوچستان کے ساحلی علاقے بھارتی ریاست گجرات سے آنے والے مون سون بارشوں کے سسٹم کے زیراثر ہیں۔

کراچی کے ساتھ ساتھ حیدرآباد، ٹھٹھہ ، تھرپارکر، عمرکوٹ ، جامشورو، ٹنڈوالہ یار، ٹنڈو محمد خان، بدین اور سانگھڑ میں بھی بارش کا امکان ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو