شہبازشریف سے دودھ خریدنے والے مل گئے

معاون خصوصی شہزاد اکبر نے کہا کہ شہباز شریف جن فرشتوں کو اپنی بھینسوں کا کروڑوں روپے کا دودھ بیچتے تھے وہ منظرعام پر آچکے ہیں۔

وزیراطلاعات کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے شہزاد اکبر نے کہا کہ مسرور انور شریف خاندان کا ملازم ہے ، اسی نے خان ٹریڈرز اور دیگر کے اکاونٹ سے کئی بار پیسے نکالے اور شہبازشریف کے ذاتی اکاونٹ میں جمع کرائے گئے۔  مسرور انور نیب کی حراست میں ہیں۔ نون لیگی رکن پارلیمنٹ سیف الملوک کھوکھر نے 25 لاکھ روپے دیئے جبکہ چیک کے اوپر نثار ٹریڈرز لکھا ہے ، ثبوت موجود ہیں اب عدالت میں جواب دینا پڑے گا۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی نے طنز کیا کہ شہباز شریف کورنٹائن در کورنٹائن میں چلے گئے ہیں ، میاں صاحب نے تو پردے سے نکلنا نہیں ، مریم اورنگزیب ہی ان باتوں کا جواب دے دیں۔ شہزاد اکبر نے شہباز شریف کو مشورہ دیا کہ لندن میں کورونا پھیلا ہے ، وہاں بہت زیادہ خطرہ ہے اور لئے برطانیہ نہ جایئے گا۔

وزیراطلاعات شبلی فراز کا کہنا تھا کہ ملک 2 قسم کے وائرس کا شکار ہے ، ایک کورونا اور دوسرا کرپشن ، کرپشن کے وائرس کا علاج عمران خان ہیں۔ دوسرے وائرس کو عمران خان ہی ختم کریں گے، یہ وائرس عوام کا خون چوستا ہے اور ملک کو قرضوں میں ڈبوتا ہے، شہباز شریف اینڈ سنز پرائیویٹ لمیٹڈ اس دوسرے والے وائرس کا شیئر ہولڈر ہے، انھوں نے ملکی وسائل پامال کئے اور اپنے لئے دوسری دنیا آباد کر رکھی ہے ، یہ واپس جانا چاہتے ہیں لیکن ایسا ہوگانہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو