ویتنام میں پاکستانی پائلٹس گراونڈ

پاکستان میں پائلٹس کے لائسنس جعلی ہونے کا انکشاف ہونے کے بعد ویتنام نے پاکستانی پائلٹس کو گراونڈ کردیا۔

برطانوی خبرایجنسی نے ویتنام کی ایوی ایشن اتھارٹی کے حوالے سے بتایا کہ مقامی ایئرلائنز میں کام کرنے والے تمام پاکستانی پائلٹس کو گراونڈ کرکے معطلی کا حکم جاری کیا جاچکا ہے ، ویتنام کی سول ایوی ایشن اتھارٹی افسر نے بتایا کہ وہ پاکستانی حکام سے رابطے میں ہیں تاکہ پائلٹس کے حوالے سے تصدیق کا عمل مکمل کیا جا سکے۔

ویتنام میں 27 پاکستانی پائلٹس کو لائسنس جاری کئے گئے تھے، 12 پاکستانی پائلٹس اب بھی کام کر رہے تھے جبکہ 15 پائلٹس میں سے کئی کے لائسنس کی مدت ختم ہو چکی ہے یا وہ کورونا وائرس کی وجہ سے غیرفعال ہیں۔

کویت ایئرویز کا کہنا ہے کہ 13 پاکستانی انجینئر کویت ایئرویز میں خدمات انجام دے رہے ہیں جن کی دستاویزات کی تصدیق کا عمل جاری ہے۔

وزیرہوا بازی غلام سرور خان نے کچھ روز پہلے انکشاف کیا تھا کہ پی آئی اے کے 30 فیصد پائلٹس کے لائسنس جعلی ہیں۔ اس کے بعد تقریبا 150 پائلٹس کو گراونڈ کردیا گیا تھا۔

ٹرینڈنگ

مینو