جہاں کیس وہاں اسمارٹ لاک ڈاؤن

وزیر منصوبہ بندی و ترقی اسد عمر نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی موجودہ صورتحال میں بڑے فیصلے کئے جاچکے ہیں، کورونا کیسز کا پتہ ٹیکنالوجی کے ذریعے چلایا جارہا ہے۔

اسلام آبادمیں میڈیا بریفنگ کے دوران اسد عمر نے بتایا کہ طویل عرصے تک لوگوں سے روزگار نہیں چھینا جاسکتا لیکن وبا بھی پھیل رہی ہے، پورا ملک بند کرنے کے بجائے جہاں وبا پھیل رہی ہے انھیں بند کرنا چاہئے۔

وفاقی وزیر نے بتایا کہ کراچی میں بہت زیادہ کیسز ہیں ، لاہور میں ٹھوکر نیاز بیگ کا قریبی علاقہ شہر میں سب سے زیادہ متاثر ہے، پنجاب میں تین سو انسٹھ علاقے ہیں جہاں اسمارٹ لاک ڈاؤن کیا ہے، خیبرپختونخوا میں ایک سو ستتر مقامات پر اسمارٹ لاک ڈاؤن ہوا، ایسا نظام چاہئے جس میں وبا پھیلنے پر لوگوں کو اسپتال پہنچایا جاسکے اور طبی مراکز میں مناسب انتظامات ہوں۔

انھوں کاکہنا تھا کہ مکمل لاک ڈاؤن نہ کرنے کا مطلب یہ نہیں کہ حفاظتی اقدامات نہ کئے جائیں ، لاک ڈاؤن نرم کرنے کے بعد احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا زیادہ ضروری ہوگیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو