صوبے پبلک ٹرانسپورٹ کھول دیں، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے تمام صوبوں سے پبلک ٹرانسپورٹ کھولنے کی درخواست کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن سے کورونا وائرس ختم نہیں ہوگا۔

کورونا صورتحال پر اجلاس کے بعد وزیراعظم نے سرکاری ٹی وی پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر 2 یا 3 ماہ کے لاک ڈاؤن سے کورونا ختم ہونے کا یقین دلایا جاتا تو ایسا کرلیتے ، ایک سال بھی ویکسین آنےکا امکان نہیں ، جب لاک ڈاؤن ختم کریں گے کیسز بڑھیں گے، ایسے میں ایک سال وائرس کے ساتھ رہ کر گزارہ کرنا ہوگا۔

وزیراعظم نے طبی ماہرین سے سوال کیا کہ لاک ڈاؤن سے متاثرہ 15 کروڑ افراد کا کیا کریں ، ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے احساس پروگرام سمیت ایسے کام کئے جو ترقی یافتہ ممالک بھی نہیں کرسکے لیکن کب تک کریں گے۔ عمران خان نے دیگر ممالک کا ذکر کیا اور کہا وہ اپنے لوگوں کو کورونا اور ہم بھوک سے مرنے سے بچا رہے ہیں، لاک ڈاؤن ختم کرنا مجبوری ہے۔ کاروبار کھلنے پر مالک کو ایس او پیز پر عمل کرنا ہوگا۔

وزیراعظم نے بتایا کہ کورونا سے ابتک 52 ہزار کیسز اور ایک ہزار 324 اموات کا خدشہ تھا ، اس وقت کیسز 35 ہزار 700 اور اموات 770 ہیں جو اندازے سے کم ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ایک دو صوبوں کو ٹرانسپورٹ کھلنے سے کورونا پھیلنے کا خدشہ ہے، میں درخواست کرتا ہوں کہ پبلک ٹرانسپورٹ کھول دیں کیونکہ ٹرانسپورٹ بند کرکے غریب کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو