اگلی عید وائٹ ہاوس میں ہوگی، جل بائیڈن

طاہر عباس

امریکا کے ڈیموکریٹ صدارتی امیدوار جو بائیڈن کی اہلیہ جل بائیڈن نے مسلم کمیونٹی کو عید کی مبارکباد دی ہے اور  کہا ہےکہ  وہ بے چینی سے اگلی عید کی منتظر ہیں کیونکہ اگلی عید وہ مسلم کمیونٹی کے ساتھ وائٹ ہاوس میں منائیں گی۔

جل بایئڈن نے یہ بات اپنے شوہر اور ڈیموکریٹ پارٹی کے صدارتی امیدوار بننے کے خواہش مند جو بائیدن کی انتخابی مہم کے سلسلے میں آڈیو خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس خطاب کو سننے کیلئے امریکا بھر سے مسلم کمیونٹی کے افراد ٹیلی فون لائن پر کنیکٹ تھے جن میں پاکستانی امریکی ڈیموکریٹ طاہر جاوید بھی شامل تھے۔

امریکا : اگلی عید وائٹ ہاوس میں ہوگی، جل بائیڈن

امریکا : اگلی عید وائٹ ہاوس میں ہوگی، جل بائیڈن

Posted by Zabar News on Sunday, May 24, 2020

جل بائیڈن نے کہا کہ مشکلات ہی سے انسان میں ہمدردی کے جذبات کو تقویت ملتی ہے۔ رمضان کے روزے مسلم کمیونٹی میں نہ صرف ایک دوسرے بلکہ معاشرے کی مدد کا بھی جذبہ بڑھاتے ہیں جس کی عملی مثالیں دیکھنے کو ملی ہیں۔

جل بائیڈن نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ کے دور میں مسلم کمیونٹی کو نفرت اور تفریق کا سامنا ہے۔ یہ تفریق امریکی اقدار کے یکسر برعکس ہے۔

جل بائیڈن نے کہا کہ خوف کا ماحول اور مسلمانوں سے امتیازی سلوک اس چیز کے باوجود روا رکھا جا رہا ہے کہ مسلمانوں نے امریکی معاشرے کی ترقی کیلئے غیر معمولی کردار ادا کیا ہے۔

جل بائیڈن نے کہا کہ پرسنل پروٹیکشن ایکوپمنٹ کی کمی دور کرنے میں مسلم کمیونٹی ہی آگے بڑھی۔ ایک مسلمان ہی نے این نائنٹی فائیو ماسک کو اسٹریلائز کرکے دوبارہ استعمال کرنے کے قابل بنایا جس سے طبی عملے کو سہولت ملی۔

سابق نائب صدر کی اہلیہ کا کہنا تھا کہ مسلم کمیونٹی کورونا وبا کے خلاف ہراول دستے کا اہم حصہ ہے۔ اسی کمیوٹی کے سبب ہم وبا کا مقابلہ کرکے آگے بڑھنے کے قابل بنے ہیں۔

جل بائیڈن کا کہنا تھا کہ اتنا سب کچھ کرنے کے باوجود مسلم کمیونٹی سے امتیازی رویہ قابل افسوس ہے۔ وہ اور جو بائیڈن مسلم کمیونٹی کے ساتھ کھڑے ہیں۔

صدارتی انتخابات سے متعلق جل بائیڈن کا کہنا تھا کہ جو فیصلہ آئندہ چند ماہ میں لوگ کریں گے اس کے اثرات عشروں تک ہوں گے تاہم وہ اس بات کی راہ دیکھ رہی ہیں کہ نومبر میں جو بائیڈن صدر منتخب ہوں اور اگلی عید پر وہ مسلم کمیونٹی کو وائٹ ہاوس مدعو کریں۔

امریکا کی مختلف ریاستوں میں مسلم کمیونٹی نے اس بار  سادگی سے عید منائی ہے۔ نیویارک اور واشنگٹن ڈی سمیت مختلف مقامات پر نماز عید کے محدود اجتماعات ہوئے۔

نیویارک کے مغربی علاقے میں مسلم کمیونٹی نے کار پریڈ کا اہتمام کیا جس میں پاکستانی کمیونٹی بڑی تعداد میں شریک ہوئی۔

یونیورسٹی آف بافیلو سے اسلامی مرکز ایمرسٹ تک جانے والی اس ریلی میں لوگوں نے سماجی فاصلے کا خاص طور پر خیال رکھا۔

زیادہ تر افراد نے عید گھروں پر فیملی کے ساتھ منائی۔ مزے مزے کے کھانوں سے لطف اٹھایا اور پاکستان سمیت مختلف ممالک میں آباد اپنے عزیزوں سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر بات کی۔

ٹرینڈنگ

مینو