فیس ماسک پہننا لازمی قرار، حکومت کا بڑا قدم

حکومت نے آخر کار بڑا قدم اٹھا لیا، عوامی مقامات پر فیس ماسک کا استمعال لازمی قرار دے دیا گیا۔

معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ شہریوں کو عوامی مقامات پر سماجی فاصلے کی پابندی کرنی ہوگی، مساجد، دفاتر ، شاپنگ مال اور پبلک ٹرانسپورٹ میں ماسک پہننا لازمی ہوگا۔

ڈاکٹر ظفر مرزا نے بتایا کہ سرجیکل اور کپڑے کے ماسک استعمال کئے جاسکتے ہیں ، ایس او پیز اور گائیڈلائنز پر سختی سے عملدرآمد کی ضرورت ہے۔

معاون خصوصی معید یوسف نے بتایا کہ اب تک 33 ہزار پاکستانیوں کو 55 ممالک سے واپس لایا جاچکا ہے، ایک ہزار مسافروں کو روزانہ واپس لایا جارہا ہے، اگلے 10 روز میں 20 ہزار پاکستانیوں کو واپس لایا جائے گا، سمندر پار پاکسانیوں کیلئے جلد نئی پالیسیاں لائیں گے۔

معید یوسف نے بتایا کہ زمینی سرحدیں پہلے کی طرح آپریٹ کر رہی ہیں، بھارت سے 180 پاکستانی واپس لائے گئے ہیں ، افغان حکومت کی درخواست پر طورخم اور چمن سے ٹرک پڑوسی ملک جارہے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو