دنیا کب جاگے گی ؟ نواسے کا ویڈیو بیان

مقبوضہ کشمیر میں کم سن نواسے کے سامنے بشیر احمد کے قتل نے دل دہلادیئے ، کیا بھارتی فورسز کے ہاتھوں یہ قتل عالمی برادری کا ضمیر جھنجھوڑ پائے گیا ؟ یہ وہ سوال ہے جو ہرمظلوم کی زبان پر ہے، سوشل میڈیا صارفین نے مقتول کی لاش عالمی ادارے کے فرش پر رکھی دکھا کر اسی سوال کا جواب معلوم کرنے کی کوشش کی ہے۔

سوپور میں قتل کئے گئے بشیر احمد کی موت نے بھارتی فورسز کی بربریت کا پردہ چاک کردیا، بشیر احمد منوں مٹی تلے جاسوئے لیکن سوتے ہوئے ضمیر جگا گئے۔ اب نہ صرف مقبوضہ کشمیر بلکہ بھارت سے بھی انصاف کی صدائیں بلند ہورہی ہیں۔

بھارتی فورسز نے بدھ کو 65 برس کے بشیر احمد کو گاڑی سے اتار کر قتل کیا تھا ، مقتول کے سینے پر بیٹھے روتے ہوئے نواسے کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی تھیں۔ کم سن کیلئے وہ منظر بھلانا ناممکن ہے۔

مقتول کے رشتے داروں کے بیانات بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہیں اور صرف یہی خاندان نہیں پوری مقبوضہ وادی میں انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔

بشیر احمد کے قتل نے جہاں بھارتی فورسز کی سفاکیت سے ایک بار پھر پردہ اٹھایا وہیں آزادی کی تحریک کو بھی جلا بخشی ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو