کراچی میں لوڈشیڈنگ ، احتجاج کی تیاری

کراچی میں لوڈشیڈنگ ناقابل قبول ہوگئی، نیشنل گرڈ سے 800 میگاواٹ فراہمی کے باوجود شہر قائد میں بجلی گھنٹوں غائب رہنے لگی تو عوامی نمائندوں نے کے الیکٹرک کے خلاف احتجاج کا اعلان کردیا۔

شدید گرمی کے دوران مختلف علاقوں میں گھنٹوں لوڈشیڈنگ ، کراچی والے ان دنوں دوہرے عذاب میں مبتلا ہیں۔

پاور ڈویژن شارٹ فال زیرو ہونے کا دعوی کرتا ہے اور طلب 23 ہزار 527 جبکہ پیداوار 25 ہزار میگاواٹ بتائی جارہی ہے اس کے باوجود کراچی میں بدترین بحران جاری ہے، شہر کے مختلف علاقوں میں 3 سے 15 گھنٹے تک بتی غائب رہنے کے باعث شہری شدید پریشانی کے شکار ہیں۔

کاروباری افراد تو سر پکڑے بیٹھے ہی ہیں طلبا کیلئے آن لائن کلاسز لینا بھی مسئلہ بن گیا ہے۔ شہر میں لوڈشیڈنگ سے مستثنی علاقوں میں بھی 2 سے 3 گھنٹے لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔

صورتحال ناقابل قبول ہوئی تو پی ٹی آئی کے رکن سندھ اسمبلی راجہ اظہر نے کے الیکٹرک آفس کے سامنے دھرنے کا اعلان کردیا، ان کا کہنا ہے کہ 6 جولائی کے احتجاج میں پارٹی کے دیگر ارکان سندھ اسمبلی بھی شرکت کریں گے۔

ٹرینڈنگ

مینو